غلاف کعبہ کی دیکھ بھال کے لئے فنی ماہرین کیا کرتے ہیں ، اہم انکشاف

مسجد حرام میں (نیوزڈیسک) بیت اللہ کی خصوصی دیکھ بھال سے متعلق مناظر اکثر و بیشتر دیکھنے میں آتے ہیں۔ ایسے میں مختلف خدمات پر مامور نوجوان طواف کرنے والوں کے بیچ اپنی اس منفرد ذمے داری کو انجام دینے میں مصروف رہتے ہیں۔اس سلسلے میں بیت اللہ کے غلاف میں سلائی کرتے ہوئے سعودی نوجوان اشرف المحمادی نے العربیہ کو بتایا کہ ” الحمد للہ میں 15 برسوں سے یہ خدمت انجام دے رہا ہوں ہے۔ ابتدا میں سِلائی کے کام میں دشواری کا سامنا کرنا پڑا مگر وقت گزرنے کے ساتھ اب مجھے اس کام میں مہارت حاصل ہو گئی ہے۔

المحمادی روئے زمین کے افضل ترین غلاف کے حوالے سے اس خدمت اور عظیم سعادت کے بارے میں اپنے چاہنے والوں کو بتاتے رہتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ” یہ میرے لیے بہت بڑا اعزاز اور عظیم خدمت ہے کہ میں بیت اللہ کا غلاف تھام کر کام کرتا ہوں۔ اللہ کا بہت فضل اور احسان ہے کہ اس نے مجھے اس خدمت کے واسطے چُنا۔ میں اللہ سے صرف توفیق اور نیت کے اخلاص کا طالب ہوں”۔اشرف المحمادی اگرچہ بیت اللہ کے غلاف کے پھٹ جانے کے منظر سے مانوس ہو چکے ہیںمگر اب بھی یہ منظر دانستہ یا غیر دانستہ طور پر انہیں غصے میں لے آتا ہے۔ اس موقع پر وہ سوئی اور دھاگہ ہاتھ میں لے کر غلاف کو سینے میں مصروف ہو جاتے ہیں تا کہ اُس کا جمال پھر سے لوٹ آئے۔المحمادی کہتے ہیں کہ ” اس خدمت کے سبب ہر کوئی ہمارے لیے خیر کی دعا کرتا ہے۔ صاف بات تو یہ ہے کہ ہر کوئی اس مقام اور اس خدمت تمنا کرتا ہے۔ بہرکیف اللہ کا شکر اور احسان ہے کہ اس نے جس کو بھی اپنی حکمت سے اس مقصد کے لیے چُنا”۔المحمادی کے قریب ہی سفید ٹوپی لگائے ہوئے ان کے ساتھی فہد الجابری بھی نظر آتے ہیں۔ وہ گزشتہ 20 برسوں سے غلافِ کعبہ کی خدمت انجام دے رہے ہیں۔ وہ تقریبا ہمہ وقت مسجد حرام میں موجود رہتے ہیں اور اس دوران غلافِ کعبہ کے ایک ایک حصے پر اپنی نظر رکھتے ہیں۔غلافِ کعبہ پر گَرد کا کوئی ذرہ ایسا نہیں ہوتا جو الجابری کی نظروں میں آ چکا ہو اور وہ اس کو فوری طور پر صاف نہ کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں